+(92)305 9265985 +(92) 0300 8040571
books4buy info@books4buy.com

Blog Post

حضرت بابا بلھے شاہؒ کی ابتدائی زندگی


حضرت بابا بلھے شاہ کا حقیقی نام سید عبداللہ ہے مگر آپ نے بابا بلھے شاہ کے نام سے شہرت پائی۔ لوگوں کی اکثریت آپ کے حقیقی نام سے بے خبر ہے اور اس کی وجہ بھی یہی ہے کہ آپ نے اپنے کلام میں بھی خود کو بلھا کہہ کر پکارا ہے۔ آپ کا تعلق سادات گھرانے سے تھا اور آپ کا شجرہ نسب چودہ واسطوں سے حضور غوث اعظم حضرت سید نا عبدالقادر جیلانی اور پچیس واسطوں سے حیدر کرار حضرت سیدنا علی المرتضیٰ کرم اللہ وجہہ سے جا ملتا ہے۔
:حضور غوث اعظم رحمتہ اللہ علیہ سے روحانی و نسبی تعلق
حضرت بابا بلھے شاہ کا تعلق حضور غوث اعظم ؒ سے ان کے دوسرے بیٹے حضرت سید عبدالرزاق کی نسل سے ہے اور آپ کے والد بزرگوار حضرت سید سخی درویش محمد اُچ شریف سے ملکوال تشریف لائے جو ضلع لاہور کے ایک علاقے کا ہنہ نو کے نواح میں واقع ہے اور ملکوال اب ضلع قصور کی حدود میں شمار ہوتا ہے۔
:حضرت بابا بلھے شاہ کے والد بزرگوار
حضرت بابا بلھے شاہ کے والد بزرگوار حضرت سید سخی شاہ محمد درویش فطرتی طور پر نیک عادات و اطوار کے مالک اور جید عالم دین تھے اور روحانیت سے بھی شغف رکھتے تھے۔ آپ کی نیک فطرت اور پاکبازی کی وجہ سے لوگ آپ کو درویش کےلقب سے پکارتے تھے۔ آپ کا مزار مبارک پانڈو کے بھٹیاں میں واقع ہے اور مرجع گاہ خلائق خاص و عام ہے جہاں ہر سال عرس کی تقریبات منعقد کی جاتی ہیں۔
:حضرت بابا بلھے شاہ کی ہجرت
حضرت بابا بلھے شاہ کے والد بزرگوار حضرت سخی محمد درویش نے معاشی حالات کے باعث اچ شریف کو خیر با د کہا اور مال مویشیوں و گھر کو فروخت کرکے روزگار کی تلاش اور تبلیغ دین کے لئے ساز گار ماحول کی تلاش میں نکل پڑے۔ اس سفر میں حضرت سخی شاہ محمد درویش رحمتہ اللہ علیہ کے ساتھ ان کی زوجہ اور فرزند حضرت بابا بلھے شاہ بھی تھے۔ مختلف جگہوں پر قریہ بہ قریہ سفر کرتا یہ قافلہ بالآخر اپنی منزل مقصود کو پہنچا اور ملکوال وارد ہوا۔ حضرت سخی شاہ محمد درویش نے اپنی زوجہ کے مشورہ سے یہی پر سکونت اختیار کی۔
:والد بزرگوار کا مسجد کا امام مقرر ہونا
اولیاء اللہ تو موجود ہیں اب بھی مگر
آبروئے محفل اقطاب رخصت ہو گیا
حضرت بابا بلھے شاہ رحمتہ اللہ علیہ کے والد بزرگوار نے ملکوال میں کچھ عرصہ قیام کے بعد ایک مسجد میں امامت کے فرائض انجام دینا شروع کر دئیے اور اس کی وجہ یہ تھی کہ ملکوال کے لوگ بڑی شدت کے ساتھ عرصہ دراز سے کسی صحیح مذہبی رہنما اور عالم دین کا انتظار کر رہے تھے جو ان کی شریعت کے معاملہ میں درست رہنمائی فرما سکے۔
اہلیان ملکوال نے جب ایک نیک سیرت انسان کو اپنے درمیان دیکھا تو انہوں نے حضرت سخی شاہ محمد درویش سے درخواست کی کہ آپ ہماری مسجد میں امامت کے فرائض انجام دیں اور ہمیں وعظ و نصیحت بھی فرمائیں۔
آپ کے والد چونکہ خود بھی مذہبی رحجان رکھتے تھے اور اسی وجہ سے آپ نے اپنا آبائی وطن چھوڑا تھا۔ اس لئے ملکوال کے لوگوں کی درخواست پر امامت شروع کر دی اور اس کے ساتھ ساتھ لوگوں کو وعظ و نصیحت بھی شروع کر دیا جو اس علاقے کے لوگوں کے لئے نئی بات تھی۔ رفتہ رفتہ مسجد میں لوگوں کا ہجوم ہونا شروع ہو گیا اور لوگ نہایت انہماک سے حضرت سخی شاہ محمد درویش کے درس میں شریک ہونے لگے۔ حضرت سخی شاہ محمد درویش کا انداز بیاں اس قدر جامع ہوتا تھا کہ رفتہ رفتہ لوگ آپ کے گرویدہ ہوتے چلے گئے۔ آپ نے وہاں پر ایک چھوٹا مدرسہ بھی قائم کیا اور بچوں کو دینی تعلیم دینا شروع کر دی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Related Posts

Baba Bulleh Shah Poetry in Punjabi top collection 04

Baba Bulleh Shah Poetry in Punjabi top collection 04 First of all thanks for landing

Baba Bulleh Shah Poetry in punjabi top Collection 03

Baba Bulleh Shah Poetry top Collection 03 First of all thanks for landing this article,

Baba Bulleh Shah Poetry top Collection 02

Baba Bulleh Shah Poetry top Collection 02 First of all thanks for landing this article,

Baba Bulleh Shah Poetry Best Collection

Baba Bulleh Shah Poetry Best Collection First of all thanks for landing this article, if

واقعہ حضرت بابا بلھے شاہ ایک سکھ سپاہی کی مدد کرنا

حضرت بابا بلھے شاہ رحمتہ اللہ علیہ کا زمانہ سیاسی انتشار سے بھر

حضرت بابا بلھے شاہ ؒ کی حضور داتا گنج بخش ؒ کے مزار پر حاضر

لاہور میں حضرت عنایت قادری کی خانقاہ میں قیام کے دوران حضرت بابا

بابا بلھے شاہ ؒ کی اپنے مرشد سے محبت اور خاندان سے اختلاف

حضرت بابا بلھے شاہ (رحمتہ اللہ علیہ) کی ہمشیرگان اور دیگر اہل خانہ نے

حضرت بابا بلھے شاہؒ کا اپنے مرشد تک سفر

حضرت بابا بلھے شاہ کو آپ کے جد امجد سید عبدالحکیم کی زیارت حضرت

حضرت بابا بلھے شاہ کی پانڈو کے منتقلی

حضرت سخی شاہ محمد درویش کو ملکوال میں آباد ہوئے کچھ زیادہ عرصہ نہیں