+(92)305 9265985 +(92) 0300 8040571
books4buy info@books4buy.com

Blog

حضرت محمد ﷺ اور اصحابہ کرام کے فیصلے 6 نایاب کتابیں

معزز خواتین و حضرات بکس فار بائے کی جانب ایک اور آفر کے ساتھ ہم حاضر ہیں آج ہم لائے ہیں آپ کے لئے 6 نایاب اسلامی کتابیں نمبر 1 حضرت محمد ﷺ کے فیصلے نمبر2 حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ عنہ کے فیصلے نمبر3 حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے فیصلے نمبر4 حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ کے فیصلے نمبر5 حضرت علی رضی اللہ عنہ کے فیصلے نمبر6 حضرت امام حسن رضی اللہ عنہ کے فیصلے ان تمام کتابوں کی کل قیمت ہے 1800 روپے لیکن اس آفر میں یہ Read More...

شادی بیاہ کے موقع پر دیا جانے والا دلچسپ نایاب تحفہ

معزز خواتین و حضرات بکس فار بائے کی جانب ایک اور آفر کے ساتھ ہم حاضر ہیں آج ہم لائے ہیں آپ کے لئے 4 نایاب بکس مدنی شادی مبارک مع علاج الاامراض تحفہ النکاح تحفہ دولہن تحفہ دولہا چار عدد ان کتابوں کے کی قیمت ہے 1150 روپے لیکن یہ کتابیں اب آپ کو ملیں گیں صرف 800 روپے تو دوستوں جلدی کریں ۔ کیونکہ اپنے دوست احباب کو شادی کےموقع پر اس سے بہتر کوئی اور تحفہ نہیں دے سکتے۔ ان کتابوں میں مکمل طور Read More...

حضرت موسیٰ علیہ السلام پارٹ ون

معزز خواتین و حضرات ہم لائیں آپ کے لئے اسلامی معلومات کا خزانہ یہ سلسلہ انشاء اللہ جاری رہے گا۔ حضرت موسیٰ علیہ السلام حضرت موسیٰ علیہ حضرت ابراہیم علیہ السلام کی اولاد میں سے ہیں، آپ کا نسب یوں ہے: موسیٰ بن عمران بن قاہت بن عاز بن لاوی بن یعقوب بن اسحٰق بن ابراہیم۔ چونکہ حضرت موسیٰ علیہ السلام کا نسب حضرت یعقوب علیہ السلام سے بھی جا ملتا ہے اور یعقوب علیہ السلام کی اولاد کو بنی اسرائیل کہا جاتا ہے Read More...

نقش اول کتاب ہاں یہ بھٹو ہے پارٹ 2

محترم خواتین و حضرات ہم حاضر ہیں رائے ارشاد صاحب کی کتاب ہاں یہ بھٹو ہےمیں سے انتساب اس سے پہلے کچھ ابتدائیہ آپ پڑھ چکے ہیں۔ جانئے آگے۔۔۔ نامور فرانسیسی ادیب و صحافی آندرے مالرو نے جمال عبدالناصر کے بارے میں لکھا تھا کہ کامیابی ، ناکامی، فتح، شکست ہر چیز سے قطع نظر، تاریخ میں اسے ایک ایسے شخص کے طور پر یاد رکھا جائے گا، جس کی ذات میں روح مصر نے خود کو پا لیا۔ یہ Read More...

کنڈی نا کھولنا کہانی نوک پلک شکیل احمد چوہان

معزز خواتین و حضرات ہم حاضر ہیں شکیل احمد چوہان صاحب کی کتاب نوک پلک کی ایک اور کہانی کے ساتھ جس کا عنوان ہے کنڈی نا کھولنا۔۔۔۔ اس سے پہلے آپ ایک پڑھ چکے ہیں “پانچ کا نوٹ” چلیے وقت ضائع کیے بغیر اپنی اگلی کہانی کی طرف بڑھتے ہیں۔ کنڈی نا کھولنا ۔۔۔ شکیل احمد چوہان پرانے وقتوں کی بات ہے۔ وہ پُوکے جھاڑے کی ایک رات تھی۔ عشا کی نماز کے بعد گاؤں کے بڑے بوڑھے اپنے اپنے Read More...

ہاں یہ بھٹو ہے پارٹ ون رائے ارشاد کمال

ہاں یہ بھٹو ہے! اک متاعِ دل و جاں پا س تھی سو ہار چکے ہائے! یہ وقت کہ اب خود پر گراں ہیں ہم لوگ You can Break my body, But cannot break my spirit جدیدمسلم معاشرے کا ایک المیہ سطحی جذباتیت ہے، اور سیاسی و مذہبی کلچر میں حقائق کی دریافت گویا شجر ممنوعہ ! جانے ہم نے کب سے تعلقات و ادراکات کو دیس نکالا دے رکھا ہے؟ سوال یہ بھی ہے کہ کیوں؟ مسلمان کئی سو سال سے غیر Read More...

افسانہ میم-پارٹ 2 زندگی کے بعد موت سے پہلے

پیارے افضل سے ملنا ہے۔ مزمل گاڑی میں بیٹھنے لگا تو اُسے سیڑھیوں سے اوپر ہال کے داخلی دروازے سے آگے وہ بلّی آنکھیں دوبارہ نظر آئیں جو مزمل کو ہی دیکھ رہی تھیں۔ بھائی…! پیارے افضل واقعی آپ کا دوست ہے؟ منیبہ نے بھی اشتیاق سے پوچھا۔ نہیں گڑیا…! وہ تو میں نے مذاق کیا تھا نہیں تو تمھارے بھائی کے دس ہزار اور چلے جاتے۔‘‘ مزمل نے گاڑی ڈرائیور کرتے ہوئے منیبہ کی طرف دیکھ کر جواب دیا۔ وہ اپنے ٹیرس Read More...

افسانہ میم-زندگی کے بعد موت سے پہلے شکیل احمد چوہان

زندگی کے بعد ۔ موت سے پہلے افسانہ میم مزمل کھانے سے فارغ ہوا تو اس نے اپنی رولکس کی گھڑی میں ٹائم دیکھا تین بجنے والے تھے۔ واپسی کب تک ہے؟ مزمل نے مبشر کے کان میں سرگوشی کے انداز میں پوچھا۔ ’’مغرب ہو ہی جائے گی۔‘‘ مبشر نے اُسی انداز میں بتایا۔ ’’OK… میں نماز کے لیے جا رہا ہوں۔ جب جانا ہو تو مجھے کال کر لینا۔‘‘ مزمل نے یہ کہا اور شادی ہال سے باہر نکل آیا۔ باہر آ کر Read More...

پانچ کانوٹ پہلا افسانہ نوک پلک مصنف شکیل احمد چوہان

پانچ کا نوٹ آج میں نے اپنے سب سے چھوٹے بیٹے کے ہاتھ میں دس روپے کا سکہ دیکھا۔ گزرے ہوئے وقت کا ایک دن یاد آگیا ۔ وقت ہم کو گزارتا ہے یا ہم وقت کو گزارتے ہیں؟یہ سوال تو اپنی جگہ بہر حال رہے گا۔ میں تو یہ جانتا ہوں ہر گزرتا دن بہت کچھ بدل جاتا ہے آپ کی ذات میں بھی اور کائنات میں بھی ۔وقت سے زمانہ ہے اور زمانے سے وقت۔ قدرت نے وقت Read More...

تیسری قسط بلال صاحب ناول-مصنف شکیل احمد چوہان

کمرے میں گیس ہیٹر کی وجہ سے اچھی خاصی حرارت موجود تھی۔ جہاں آرابیگم ہاتھ میں تسبیح لیے توبہ استغفار میں مصروف تھیں ۔ اُسی لمحے دروازہ کھلا۔ ’’ماں جی آداب…!‘‘اندر آتے ہوئے جمال رندھاوا نے کہا۔ جہاں آرا بیگم کی آنکھیں روشن ہوگئیں۔ اُنہوں نے اپنی موونگ چیئر سے اٹھنا چاہا۔ ’’آپ تشریف رکھیں ماں جی‘‘جمال رندھاوا خود ہی جلدی سے اپنی ماں کے گلے ملا پھر ماں کے قدموں میں کارپٹ پر کُشن کے اوپر بیٹھ گیا ’’میرا بچہ Read More...